Ads

نظم

 

🌺🌺🌺🌺🌺🌺🌺🌺🌺🌺🌺🌺🌺🌺🌺🌺

سنو اے چاند سی لڑکی

ابھی تم کہہ رہی تھی ناں

تمہیں مجھ سے محبت ہو نہیں سکتی

مگر اے چاند سی لڑکی

مجھے اتنا بتا دو تم

کہ جب موسم بدلتے ہیں

گلوں میں رنگ بھرتے ہیں

تو پھر کیوں مضطرب ہو کر

اکیلے پن سے گھبرا کر

ہوا کو راز دیتی ہو

مجھے آواز دیتی ہو

سنو اے چاند سی لڑکی

تمہارے سامنے کوئی 

میرا جب نام لیتا ہے

تو پھر کیوں چونک جاتی ہو

سنو اے چاند سی لڑکی

چلو مانا کہ یہ سچ ہے

تمہیں مجھ سے محبت ہو نہیں سکتی

مگر اے چاند سی لڑکی

جہاں چاہت نہیں ہوتی وہاں نفرت کے ہونے کا کوئی امکاں نہیں ہوتا

جہاں نفرت نہیں ہوتی، وہاں اکثر یہ دیکھا ہے

اگر کچھ وقت کٹ جائے، سمے کی دھول چھٹ جائے

تو وحشت بھاگ جاتی ہے، محبت جاگ جاتی ہے


سنو اے چاند سی لڑکی ۔ ۔ ۔

🌹🌹🌹🌹🌹🌹🌹🌹🌹🌹🌹🌹🌹🌹🌹🌹