Ads

پولیس روایتی تفتیشی چھترول سے باز نا آئی۔ خواتین پر چھترول کی ویڈیو سامنے آ گئی

 پولیس روایتی تفتیشی چھترول سے باز نا آئی۔ خواتین پر چھترول کی ویڈیو سامنے آ گئی۔ خاتون پر تشدد کرنے والی پرائیویٹ خاتون گرفتار، لیڈی کانسٹیبل ساتھی سب انسپکٹر کے ساتھ معطل۔

قصور ( ویب ڈیسک) پنجاب پولیس روایتی تفتیشی چھترول سے باز نا آئی۔ خواتین پر چھترول کی ویڈیو سامنے آ گئی۔ خاتون پر تشدد کرنے والی پرائیویٹ خاتون گرفتار، لیڈی کانسٹیبل ساتھی سب انسپکٹر کے ساتھ معطل۔

 تفصیلات کے مطابق تھانہ صدر میں پرائیوٹ خاتون سے 302 اور395 کے مقدمات میں شامل تفتیش خواتین پر چھترول کی ویڈیو منظر عام پر آ گئی۔ سب انسپکٹر حیدر علی کے کمرہ میں زیر تفتیش مقدمات میں شریک عورتوں کو الٹا لٹا کر تشدد کا نشانہ بنایا گیا ۔

 ‏ویڈیو میں  دیکھا جا سکتا ہے کہ ساجدہ نامی خاتون دو عورتوں پرجوتوں سے  تشدد کر رہی ہے جبکہ عائشہ نامی کانسٹیبل انکی ویڈیو بنا رہی ہے۔

 ڈی پی او قصور کے احکامات پر خاتون ساجدہ، لیڈی کانسٹیبل عائشہ اور سب انسپکٹر حیدر علی کیخلاف مقدمہ نمبر1384/21 درج کر دیا۔ جبکہ ساجدہ نامی خاتون کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

ڈی پی او قصور صہیب اشرف کے احکامات پر لیڈی کانسٹیبل عائشہ اور سب انسپکٹر حیدر علی کو معطل کر دیا گیا ہے۔